نوید ظفر کیانی کے تلخ و شیریں کلام کا مرکز

Tag Archives: منقبت

اسلامیوں کا اک نقشِ اسلم
ہونے نہیں دی لو حق کی مدھم
کعبہ میں سربسجدہ تھا ضیغم
فاروقِ اعظمؒ

ایمان دے کر تجھ سے ولی کو
تحفہ دیا تھا رب نے نبی کو
تحریک کر دی کچھ اور محکم
فاروقِ اعظمؒ

بہرِ وفا تھی جاں بر ہتھیلی
ہر جنگ میں تھا آقا کا ساتھی
تیغِ فساں تھی بے چین ہر دم
فاروقِ اعظمؒ

قیصر نہ کسریٰ ٹھہرا مقابل
ہر رن میں تجھ سے ہارا تھا باطل
اسلام کا اک لہراتا پرچم
فاروقِ اعظمؒ

الفاظ بخشے تونے اذاں کو
گویا بڑھا دی قندیل کی لو
تاحشر گونجے گا جس سے عالم
فاروقِ اعظمؒ

انصاف تیرا بے مثل ٹھہرا
تاریخ پر تھا اِک نقش گہرا
گفتار بے لاگ، کردار مبرم
فاروقِ اعظمؒ

کیوں ظلمتوں میں کھویا ہوا ہو
روشن ہمارا بھی راستہ ہو
کچھ لو تمھاری پالیں اگر ہم
فاروقِ اعظمؒ

Advertisements

نبی کے نطق کی خوشبوابو بکر صدیق ؓ
رہے ہیں ساتھ بہرسو، ابو بکر صدیق ؓ

ملا تھا ثانیِ اثنین کا لقب اُن کو
رسولِ پاک ﷺکے بازو، ابو بکر صدیق ؓ

کوئی نہ اُن کی طرح یارِ غار کہلایا
خلوصِ عشق سے مملو، ابو بکر صدیق ؓ

ہر ایک رُخ سے منقش رہا ہے رنگِ ثبات
وہ ہیرے تھے ہمہ پہلو ، ابو بکر صدیق ؓ

تھے سب کے واسطے اک سایۂ شجر جیسے
وہ نرم رو ،وہ شکر خو، ابو بکر صدیق ؓ

وہ روشنی کا نشاں ظلم کے اندھیروں میں
ہمیشہ صورتِ جگنو، ابو بکر صدیق ؓ

کئی غلامی کی زنجیریں توڑنے والا
کئی ضعیفوں کا دل جو، ابو بکر صدیق ؓ

وہ بت شکن تھے مسلمان ہونے سے پہلے
دبنگ نعرۂ یاہو، ابو بکر صدیق ؓ

تمام جھوٹ کا بازار ہو گیا پتھر
بنے یوں صدق کا جادو ، ابو بکر صدیق ؓ