عمرِ عزیز پھنس گئی ستر کے پھیر میں
لیکن یہ اور بات کہ جی دار پھر بھی ہیں

نہ منہ میں دانت ہے نہ کوئی آنت پیٹ میں
اک اور عقد کے لئے تیار پھر بھی ہیں