دیکھ کر ظلم کی بڑھتی ہوئی یلغار حسین (رض)
نعرہء حق کی صدا بن گئے ہر بار حسین (رض)

ارتقاء دھول کو بھی پا نہ سکی ہے جس کی
اوجِ انسانی کو وہ دے گئے معیار حسین (رض)

زندگی بھر کی بھی عزت نہ ملی دشمن کو
اور تیرے لئے تاریخ کی دستار حسین (رض)

چلنا چاہتا ہے ترے نقشِ قدم پر اور بس
جب بھی کرتا ہے کوئی کفر سے انکار حسین (رض)

مقتدر بن نہیں سکتا ہے یہاں کوئی یزید
جب تلک ملتِ بیضا میں ہے بیدار حسین (رض)

تیرا کردار ہے اک ضرب شبِ ظلمت پر
تیرا پیغام ہے اک چشمہء انوار حسین (رض)

جس کی ہیبت سے لرزتے ہیں زمانے کے خدا
ہر زمانے میں ترا نام وہ للکار حسین (رض)

معجزِ عشق کا مظہر ہے شہادت تیری
ہر زمانے کے لئے دعوتِ ایثار حسین (رض)

خطہ ء پاک کے دشمن کو خبردار کرو
وقت کے ہاتھ میں اک برہنہ تلوار حسین (رض)

Advertisements