ہمارے لیڈرِ قومی کے کیا کہنے
تجوری توند کی بھرتا چلا جاتا ہے جو قومی خزانے سے
فرینڈلی گیم کی خاطر
پلاتا ہے عوام الناس کا خوں بھی سیاسی ڈریکولاؤں کو
مگر پھر جب خزانہ خالی ہو جائے
کوئی قرضہ مکانا ہو
کسی بحران سے اپنی حکومت کو بچانا ہو
تو قربانی کی خاطر وہ
ہماری آپ کی گردن پکڑتا ہے
ہمیں بکرے سمجھتا ہے

Advertisements