وہ جس کی دیر گیری پہ جلتے ہیں دست و پے
وہ مستری بھی اپنی طرح کی ہے کوئی شے
جب کچھ نہ کر سکا
جوتا ہے اک گدھا
یُوں اُس نے میری کار کو چالُو کیا تو ہے

Advertisements