سُسروں نے شوقِ عقد کا کیسا صلہ دیا
فدوی کے طمطراق کا باجا بجا دیا
سب جانتے ہیں اب
اس کا ہے یہ سبب
مولا نے ایک سانڈ کو سالا بنا دیا

Advertisements