جانگزیں ہے ہر کسی کے دل میں کُرسی کی ہوس
سب سیاستدان نکلے نیتوں کے کالئے

نون کا یا قاف کا قصہ نہیں ہے دوستو
لیگ کی تقسیم نے سارے ہی ابجد کھالئے

Advertisements