کہا میں نے کہ لیڈر ہیں سو میرِ کارواں ہیں وہ
جواب آیا اُنہیں لوٹا کہیں بندے کہاں ہیں وہ

کہا میں نےجہاں کے منتخب افراد ہیں لیڈر
جواب آیا کی جی بالکل چغدگانِ جہاں ہیں وہ

کہا میں نےپئے عاشق عدیم المثل ہیں دلبر
جواب آیا کہ چٹے ہیں کبوتر ہیں کہ کاں ہیں وہ

کہا میں نے کہ مولانا کا شہرہ ہے جہاں بھر میں
جواب آیا کہ جی ہاں توند سے بھی بیکراں ہیں وہ

کہا میں نے بڑی شائستگی ہے اُن کے لہجے میں
وہ بولا گالیاں دینے میں بھی خاصے رواں ہیں وہ

کہا میں نے شباب اُن کا تو کمہلایا نہیں اب تک
جواب آیا ارے پولی کلر والے جواں ہیں وہ

کہا کہ آپ کے شوہر ہیں روزِ عقد سے غائب
جواب آیا کہاں ہوں گے’ جہاں میں ہوں وہاں ہیں وہ

کہا میں نے خدا رکھے بڑے سسرال والے ہو
جواب آیا کہ سچ پوچھو تو برقِ بے اماں ہیں وہ

کہا میں نے ظفر جی ہیں بڑے رومانوی شاعر
جواب آیا کہ گھر میں ایک زیرو کا نشاں ہیں وہ

Advertisements