زباں معترف ہے مگر یہ نظر
کسی کی جسامت پہ مبذول ہے

اُسے پھول کہنے میں کیا حرج ہے
ظفر پھول گوبھی اگر پھول ہے

Advertisements