درد آشنا کی طرح مرے ساتھ ساتھ رہ
تو بھی سدا کی طرح مرے ساتھ ساتھ رہ

مفہومِ ذیست پائیں مرے دل کی دھڑکنیں
دل کی صدا کی طرح مرے ساتھ ساتھ رہ

میری ہتھیلیوں کی لکیروں میں ڈوب جا
رنگِ حنا کی طرح مرے ساتھ ساتھ رہ

تیرے بغیر سخت کٹھن ہے رہِ حیات
ماں کی دعا کی طرح مرے ساتھ ساتھ رہ

پھر ازسرِ نو عہدِ وفا استوار ہو
پھر ابتدا کی طرح مرے ساتھ ساتھ رہ

پیغامبر ہوں فصل گل و لالہ کا ظفرؔ
موج صبا کی طرح مرے ساتھ ساتھ رہ

Advertisements