بپا ہے کیا بلا کا رن ۔۔۔۔ دمن دمن
چنار بھی ہیں شعلہ زن
یہ تن بدن ترا ہی دھن ۔۔۔ مرے وطن
یہی لگن ہے موجزن
فدا ہوں تیرے نام پر
سرینگر !
سرینگر !

یہ سربریدہ نوجواں ۔۔۔ یہ سخت جاں
بہار کی ہیں سرخیاں
یہ آنچلوں کی دھجیاں ۔۔۔ علم نشاں
حیاتِ نو کی داستاں
ہمہ بشارتِ ظفر
سرینگر !
سرینگر !

مجاہدوں کے قافلے ۔۔۔ جدھر چلے
لہو کے راستے بچھے
اذیتوں کے خوف سے ۔۔۔ کبھی رُکے
نہ پھانسیوں سے ہی ڈرے
تری ضیاء نظر نظر
سرینگر !
سرینگر !

Advertisements