پسینے کا چکا دیں محنتانہ
لہو کے قرض پلے پڑ نہ جائیں

جو حق مزدور کا ہے اُس کو دے دیں
کہیں لینے کے دینے پڑ نہ جائیں

 

Advertisements